ہمارے ملک سے غربت کا مکمل طور پر خاتمہ ہو چکا ہے ۔۔۔۔ اہم ترین اسلامی ملک نے شاندار اعلان کر دیا

ابوظبی(ویب ڈیسک) پائیدار ترقی کے لیے قائم امارات کے قومی ادارے نے اعلان کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات نے غربت کا مکمل خاتمہ کردیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق پائیدار ترقی کے قومی ادارے نے اپنی پہلی رپورٹ جاری کرکے بتایا کہ امارات میں غربت سے متعلق اب کوئی چیلنج باقی نہیں رہا، غربت کا 100 فیصد

خاتمہ کردیا گیا ہے۔متحدہ عرب امارات میں اب کوئی بھی ایسا شہری نہیں جس کی یومیہ آمدنی 1.25 ڈالر (4.6 درہم) سے کم ہو۔ایک رپورٹ کے مطابق ملک میں اب کوئی بھی ایسا شہری نہیں جو خط غربت کے تحت زندگی گزار رہا ہو، عالمی بینک گروپ کے مطابق یومیہ 1.25 ڈالر سے کم آمدنی غربت میں شمار کی جاتی ہے۔متحدہ عرب امارات میں اب کوئی بھی ایسا شہری نہیں جس کی یومیہ آمدنی 1.25 ڈالر (4.6 درہم) سے کم ہو، یہ رپورٹ اولیور ویمن کنسلٹنسی نے اماراتی ادارے کے اشتراک سے تیار کی۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ متحدہ عرب امارات ہلال احمر جیسی امدادی تنظیموں کے ذریعے عالمی سطح پر بھی اقوام متحدہ کے ترقیاتی اہداف کے حصول کے لیے کوشاں ہیں۔یو اے ای نے گزشتہ برسوں کے دوران اس مد میں بھاری رقوم خرچ کی ہیں، رپورٹ میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ امارات نے سرکاری کارکردگی کا معیار بلند کرنے کا ہدف حاصل کرنے کے لیے 93 فیصد سے زیادہ کامیابی حاصل کرلی ہے۔رپورٹ کے مطابق اماراتی وزارت داخلہ ملک کو امن و امان والے ممالک کی فہرست میں برقرار رکھنے کے لیے کوشاں ہیں، 2021 تک تمام سرکاری ادارے اس ہدف کو منطقی انجام تک پہنچانے کا مشن جاری رکھیں گے۔یہ رپورٹ اولیور ویمن کنسلٹنسی نے اماراتی ادارے کے اشتراک سے تیار کی گئی ہے اور اس رپورٹ کے مطابق ملک میں اب کوئی بھی ایسا شہری نہیں ہے جو خط غربت سے نیچے زندگی گزار رہا ہو۔ خیال رہے کہ عالمی بینک کے مطابق یومیہ 1.25 ڈالر سے کم آمدنی غربت

میں شمار کی جاتی ہے جبکہ متحدہ عرب امارات میں اب کوئی بھی ایسا شہری نہیں ہے جس کی یومیہ آمدنی 1.25 ڈالر یعنی 4.6 درہم سے کم ہو۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات ہلال احمر جیسی امدادی تنظیموں کے ذریعے عالمی سطح پر بھی اقوام متحدہ کے ترقیاتی اہداف کے حصول کے لیے کوشاں ہیں۔ یاد رہے کہ متحدہ عرب امارات نے گزشتہ برسوں کے دوران اس حوالے سے بھاری رقوم خرچ کی ہیں۔ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ امارات نے سرکاری کارکردگی کا معیار بلند کرنے کا ہدف حاصل کرنے کے لیے 93 فیصد سے زیادہ کامیابی حاصل کرلی ہے اور اماراتی وزارت داخلہ ملک کو امن و امان والے ممالک کی فہرست میں برقرار رکھنے کے لیے کوشاں ہے۔ متحدہ عرب امارات (United Arab Emirates) (عربی: دولة الإمارات العربية المتحدة) جزیرہ نمائے عرب کے جنوب مشرقی ساحلوں پر واقع ایک ملک ہے جو 7 امارات: ابوظہبی، عجمان، دبئی، فجیرہ، راس الخیمہ، شارجہ اور ام القوین پر مشتمل ہے۔ 1971ء سے پہلے یہ ریاستیں ریاستہائے ساحل متصالح (Trucial States) کہلاتی تھیں۔متحدہ عرب امارات کی سرحدیں سلطنة عُمان اور سعودی عرب سے ملتی ہیں۔ یہ ملک تیل اور قدرتی گیس کی دولت سے مالامال ہے اور اس کا انکشاف 1970ء میں ہونے والی براہ راست بیرونی سرمایہ کاری کے نتیجہ میں ہونے والی دریافتوں میں ہوا۔ جس کی بدولت متحدہ عرب امارات کا شمارجلد ہی نہایت امیر ریاستوں میں ہونے لگا۔ متحدہ عرب امارات انسانی فلاح و بہبود کے جدول میں ایشیا کے بہت بہتر ملکوں میں سے ایک اور دنیا کا 39 واں ملک ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں