بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت کس کے اشارے پر ختم کی ؟ نامور پاکستانی سیاستدان کا دھماکہ خیز انکشاف

اسلام آباد ( ویب ڈیسک ) سینیٹر مشاہد حسین نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کی الگ حیثیت کا ختم کیا جانا سقوط ڈھاکہ کے بعد سب سے بڑا سانحہ ہے ، امریکہ نے بھارت کوآنکھ ماری ہے جس کی وجہ سے یہ کام ہوا ہے ۔ جیونیوز کے پروگرام ”جرگہ “میں گفتگو کرتے ہوئے

سینیٹر مشاہد حسین نے کہا کہ 71کے بعد مقبوضہ کشمیر کی الگ حیثیت کا ختم کیا جانا سقوط ڈھاکہ کے بعد سب سے بڑا سانحہ ہے ، سلامتی کونسل میں اس لئے گئے ہیں کہ مسئلہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادیں موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر امریکہ چاہتا ہے کہ پاکستان افغانستان میں کردار ادا کرے تواسے بھی اس مسئلے پر کردار ادا کرنا ہو گا کیونکہ بھارت نے مشرقی محاذ گرم کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ نے بھارت کو آنکھ ماری ہے جس کی وجہ سے یہ کام ہوا ہے ۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی کے سینئیر رہنما خورشید شاہ نے پاکستان تحریک انصاف اور پاکستان مسلم لیگ ن سمیت تمام جماعتوں کو اختلافات بھلانے کا مشورہ دے دیا۔ خورشید شاہ نے کہا ہے کہ اختلافات بھلا کر آگے بڑھیں گے تو کشمیر آزاد ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں کشمیرکی آزادی کے لئے لڑنا ہے اس کے لیے ہمیں کراچی سے کشمیر اور گلگت تک نکلنا پڑے گا۔ خورشید شاہ نے یوم سیاہ کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا اختلافات بھلا کر آگے بڑھیں گے تو کشمیرآزاد ہوگا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ 80ہزارکےقریب لوگ شہید ہو چکے ہیں، ہمیں دکھاوے کی جنگ نہیں لڑنی، ہمیں وہ مکا دکھانا ہے جو لیاقت علی خان نے دکھایا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں کشمیرکی آزادی کے لئے لڑنا ہے، ہمیں مسلمانوں کا قتل عام قبول نہیں، دنیا ہمیں لالی پاپ دیتی ہے، دنیا کہتی ہے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کریں گے لیکن ساتھ ہی سب بھارت کو تھپکی دیتے ہیں۔ دوسری جانب

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ کشمیری اگلا یومِ آزادی ہمارے ساتھ منائیں گے، پورےپنجاب میں ہرضلع میں ایک سڑک کشمیرکےنام سےمنسوب کی جائیگی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اعلان کیا کہ ہر ہفتے احتجاجی ریلی نکالی جائے گی۔ انہوں نےکشمیر بنے گا پاکستان کا نعرہ بھی لگایا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب کے تمام اضلاع میں ایک ایک سڑک کشمیر کے نام سے منسوب ہو گی جس سے دنیا کو پیغام جائے گا کہ کشمیر پاکستان کا اہم ترین حصہ ہے اور پورے پاکستان اور پاکستانیوں میں کشمیر بستاہے۔ یوم سیاہ کے موقع پر اپنے پیغام میں وزیراعلی سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ پاکستان اور کشمیر نہ ٹوٹنے والے بندھن میں جڑے ہوئے ہیں، کشمیریوں کو ظلم و ستم کرکے دبانے کی بھارتی سازش بری طرح ناکام ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان دنیا کی ہر عدالت میں کشمیریوں کا مقدمہ لڑے گا،آج نہیں تو کل کشمیر آزاد ہو کر رہے گا،مودی کو مظلوم کشمیریوں کے لہو کاحساب دینا ہوگا۔ یاد رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے لائن آف کنٹرول پربھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کی شدید مذمت کی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے شہید ہونے والے فوجی جوانوں کی بہادری اور جرأت کو سلام پیش کرتے ہوئے شہید فوجی جوانوں کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پاک فوج نے بھارتی فوجیوں کو جہنم واصل کرکے دشمن کو دندان شکن جواب دیا۔انہوں نے کہا کہ دفاع وطن کیلئے اپنی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے فوجی جوان ہمارے ہیرو ہیں اور وطن کی مٹی پر فدا ہونے والے پاک فوج کے جوانوں کی عظیم قربانی کو سلام پیش کرتے ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ شہید لانس نائیک تیمور، شہید نائیک تنویر اور شہید سپاہی رمضان نے پاک وطن کی حفاظت کرتے ہوئے اپنے خون کا نذرانہ پیش کیا ہے۔ شہید فوجی جوان ہمار ے ماتھے کا جھومر ہیں اور قوم کو وطن پر نثار ہونے والے شہداء کی عظیم قربانی پر ناز ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی مسلح افواج دفاع وطن کیلئے ہمہ وقت تیار ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں