خان صاحب سارا قصور ہمارا نہیں : اصل چور یہ ہے اسے پکڑو سارا پیسہ مل جائے گا۔۔۔۔ آصف زرداری نے عمران خان کو کس سے تفتیش کرنے کا مشورہ دے ڈالا؟ جانیے

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئر مین اور سابق صدر آصف علی زرداری نے وزیراعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ جو باہر جاکر کہتے ہیں کروڑوں کھاگئے، وہ حفیظ شیخ پکڑ کر جیل میں ڈالیں، پتہ چل جائے گا کہ کدھر ہیں ہزاروں اور کروڑوں روپے۔ پیر کو اسلام آباد

کی عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو میں سابق صدر آصف زرداری نے کہا کہ کرپشن پر باتیں کرنے والے عبدالحفیظ شیخ کو پکڑیں، وہ جو باہر جاکر کہتے ہیں کروڑوں کھاگئے۔ وہ حفیظ شیخ پکڑ کر جیل میں ڈالیں، پتہ چل جائے گا کہ کدھر ہیں ہزاروں اور کروڑوں۔صحافی کے سوال پر کہ کیا آپ مولانا فضل الرحمان کے ملین مارچ میں شرکت کریں گے، آصف زرداری نے کہا کہ ملین مارچ میں ہم کورٹ سے شریک ہوں گے، فکرنہ کرو۔سابق صدر آصف علی زر داری نے کہاکہ بیرون ملک پتہ ہی نہیں کرکٹ بیٹ کیا ہے؟صحافی نے سوال کیا کہ تحریک انصاف نے عالمگیر خان کی گرفتاری کو سیاسی انتقام کا نام دیا، آپ کیا سمجھتی ہیں؟ جس پر فریال تالپور نے جواب دیا کہ نو کمنٹس۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق منشیات برآمدگی کے الزام میں گرفتار رانا ثنا اللہ خان نے کہا ہے کہ میرے خلاف فرضی کہانی بنائی گئی،وہ ویڈیو کدھر ہے جس کا ذکر کیا جارہا تھا، تھانے جانے تک میرے ساتھ کوئی بات نہیں ہوئی اور اگلے روز کہہ دیا گیا کہ آپ سے 15کلو ہیروئن برآمد ہوئی ہے، انہیں اپنے فراڈ کو ثابت کرنے کے لئے مرضی کا جج چاہیے۔ عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ خان نے کہا کہ ویڈیو کے بارے شہریار آفریدی نے دعویٰ کیا تھا کہ منشیات برآمدگی کا ثبوت اس میں موجود ہے،یہ ویڈیو کی بات کرتے ہیں میں انہیں کہتا ہوں کہ مدعی میجر عزیز اللہ کی گاڑی میں میر ے ساتھ بیٹھنے یا بات کرنے کی کوئی تصویر دکھا دیں جس میں وہ مجھ سے کوئی سوال کر رہا ہو کہ ہم نے آپ کی گاڑی سے کوئی برآمدگی کی ہے۔ مجھے پکڑا گیا اور وہاں سے تھانے لے آئے اور یہاں بھی ایک لفظ گفتگو نہیں کی گئی۔ اگلے روز کہہ دیا گیا کہ آپ سے 15کلو ہیروئن برآمد ہوئی ہے۔چالان پیش کر کے اپنی مرضی کا متن لکھ لیا گیا ہے او رمیر ابیان ہی نہیں لیا گیا۔ منشیات برآمدگی کے الزام میں گرفتار رانا ثنا اللہ خان نے کہا ہے کہ میرے خلاف فرضی کہانی بنائی گئی،وہ ویڈیو کدھر ہے جس کا ذکر کیا جارہا تھا، تھانے جانے تک میرے ساتھ کوئی بات نہیں ہوئی اور اگلے روز کہہ دیا گیا کہ آپ سے 15کلو ہیروئن برآمد ہوئی ہے بتایا جائے وہ ویڈیو کہاں ہے جس میں اس کے ثبوت تھے۔ میرے اعترافی بیان کی بھی فرضی کہانی ہے، اب ان کو اپنے فراڈ کو ثابت کرنے کے لئے مرضی کا جج چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ انشا اللہ ہم سر خرو ہوں گے او راللہ تعالیٰ ان کے جھوٹ کو ایکسپوز کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ میں اپنی پارٹی،لیڈر نواز شریف اور شہباز شریف کے ساتھ ہوں، پہلے میں سو فیصد تھا اب میں ایک ہزار فیصد ساتھ ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں