یہ 40نوکریاں اب صرف سعودیوں کو ملا کریں گی ۔۔۔۔سعودی حکومت نے اعلان کردیا

جدہ(ویب ڈیسک) سعودی عرب میں غیرملکیوں کے کئی سیکٹرز میں نوکریاں کرنے پر پابندی عائد کی جا چکی تھی، اب تارکین وطن کے لیے ایک اور بری خبر آ گئی ہے کہ مزید 41قسم کی نوکریاں صرف سعودی باشندوں کے لیے مختص کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ عرب نیوز کے مطابق سعودی وزیر

محنت و سماجی ترقی احمد بن سلیمان الرجحی کی طرف سے حکم جاری کیا گیا ہے کہ مدینہ منورہ میں 41قسم کی نوکریوں پر صرف سعودی مردوخواتین کو رکھا جائے گا۔ ان میں کلوزڈ مارکیٹس، کمرشل سنٹرز، مالز، این جی اوز، ہاسپٹلٹی اور ٹورازم کے شعبوں کی نوکریاں شامل ہیں۔ وزارت محنت کی طرف سے جاری بیان میں ان نوکریوں کی مزید تفصیل بتائی گئی ہے کہ ”لائٹ وہیکل ڈرائیور، آرڈر ٹیکر، سیفٹی اینڈ سکیورٹی آفیسر، ایڈمنسٹریٹو کلرک، سیکرٹری، جنرل سروسز سپروائزر، روم سروس سپروائزر، مینٹی نینس سپروائزر، سیلزاینڈ مارکیٹنگ سپروائزر، ٹورازم پروگرامز سپروائزر، فرنٹ آفس سپروائزر، سپروائزر آف ٹیلی فون آپریٹرز و دیگر نوکریوں پر اب غیرملکی کام نہیں کر سکیں گے۔ اس قبل خبر یہ آئی تھی کہ عمرہ زائرین کے لیے خوشخبری ہے کہ سعودی عرب نے عمرے کے لیے آنے والے زائرین کے لیے مکہ اور مدینہ کے علاوہ دوسرے شہروں میں جانے کی اجازت دینے کا فیصلہ کر لیا۔ عرب اخبار کے مطابق عمرہ زائرین کو 30دن کا ویزہ دیا جاتا ہے، اس سے پہلے عمرہ زائرین کو صرف مکہ اور مدینہ جانے کی اجازت دی جاتی تھی۔ اب سعودی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ عمرہ زائرین سعودی عرب میں سیاحت کے دوسرے مقامات پر بھی جا سکیں گے۔عرب اخبار کے مطابق سعودی حکومت نے یہ فیصلہ سیاحت کے فروغ کے لیے کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں