ناصر بٹ تو بڑی پہنچی ہوئی چیز نکلا ۔۔۔۔ احتساب عدالت کے جج کی خفیہ ویڈیو بنانے والے لیگی رہنماء نے کس نامور صحافی کو گاڑی بطور رشوت پیش کی؟ تہلکہ خیز انکشافات

اسلام آباد(ویب ڈیسک)جج ارشد ملک کی ویڈیو بنانے والے ناصر بٹ کے بارے میں آج کل کئی قسم کے انکشافات ہو رہے ہیں تاہم اب سینئر صحافی محمد عمران نے ان کے بارے میں مزید ہوشربا انکشافات کر دیئے ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق صحافی محمد عمران خان کا کہنا تھا کہ جب شریف فیملی

عدالتوں میں پیش ہوا کرتی تھی تو ناصر بٹ عدالت کے باہر مینجمنٹ کا کام کیا کرتا تھا ، وہاں پر کارکنوں ، رہنماﺅں اور دیگر افراد کے لئے بیکری آئٹم آیا کرتی تھی وہ ساری مینجمنٹ ناصر بٹ کرتا تھا ، اسلام آباد میں ایک صحافی نے مریم نواز اور نوازشریف سے ان کے کیسز سے متعلق تین چار مرتبہ کافی سخت سوالات کیے تھے جس پر مریم نواز نے میڈیا کے سامنے ہی کہا تھا کہ یہ ایسے ہی الٹی اور غلط بات کرتا ہے ۔اس صحافی کے بقول ناصر بٹ نے انہیں پکڑا اور سائیڈ میں لے گیا اوراس نے ایک جاپانی گاڑی کی چابی دی اور ساتھ پانچ لاکھ روپے کی پیشکش کی جس پر صحافی کی ان سے لڑائی ہو گئی اور صحافی نے کہا کہ میں شور مچا دوںگا اور سب کے سامنے جا کر بات کرتا ہوں تو ناصر بٹ نے صحافی سے معذرت کی اور گاڑی کی چابی کے ساتھ پیسے بھی واپس لے لیے ۔ یاد رہے کہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے رواں سال 26 رمضان کو مدینہ میں نواز شریف کے ایک قریبی رشتہ دار سے ملاقات کی تھی۔ سینئر صحافی انصار عباسی کا دعویٰ،روزنامہ جنگ میں شائع رپورٹ کے مطابق ن لیگ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں کے درمیان ہونے والی اس ملاقات کی خفیہ ریکارڈنگ کی گئی اور مبینہ طور پر اس میں جج ارشد ملک کے پچھتاوے اور اس بات کا اعتراف موجود ہے کہ نواز شریف کو غلط سزا سنائی گئی۔ 26رمضان کی اس ملاقات کے حوالے سے کہا جا رہا ہے کہ یہ وہ تازہ ترین ملاقات ہے جس کی خفیہ ریکارڈنگ کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں