پاکستانی کرکٹ ٹیم کا نیا کوچ کون ہوگا؟ پاکستانیوں کو سرپرائز دے دیا گیا

لاہور(نیوز ڈیسک ) ورلڈکپ کے پہلے راﺅنڈ سے اخراج پر پاکستان کرکٹ میں بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کا امکان ہے ، ہیڈ کوچ مکی آرتھر کا بھی برقرار رہنا دشوار ہوگا اور انھوں نے ڈوبتے کیریئر کو بچانے کیلئے ہاتھ پاﺅں مارنے شروع کر دیے ہیں۔ورلڈکپ میں قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد بڑے پیمانے

پر تبدیلیوں کی بازگشت جاری ہے، کوچ مکی آرتھر کی کرسی بھی خطرے میں ہے مگر انھوں نے عہدے پر برقرار رہنے کیلئے کوششیں شروع کر دی ہیں، ہیڈ کوچ نے گذشتہ روز لندن میں چیئرمین پی سی بی احسان مانی اور ایم ڈی وسیم خان سے ملاقات کرکے گرین شرٹس کیلئے اپنے ”کارنامے“ گنوائے،انھوں نے ورلڈکپ2019ءکے پہلے راﺅنڈ سے باہر ہونے کا ملبہ کارکردگی کی بجائے قسمت پر ڈال دیا۔ذرائع کے مطابق بورڈ حکام نے انھیں کسی قسم کی یقین دہانی کرانے سے گریز کرتے ہوئے فیصلہ کرکٹ کمیٹی پر چھوڑنے کا کہا جس کے سربراہ وسیم ہی ہیں، مکی آرتھر کو بتایا گیاکہ نئے کوچ کیلئے اشتہار دیا جائےگا اور وہ بھی درخواست دے سکتے ہیں،کوچ کرکٹ کمیٹی میٹنگ میں اپنے دور کے حوالے سے پریذنٹیشن دیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر مکی آرتھر کو برقرار نہ رکھا گیا تو نیا کوچ بھی غیرملکی ہی ہوگاکیوں کہ منیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان کسی پاکستانی کوچ کا تقرر نہیں چاہتے، ان کے مطابق غیر ملکی کوچ قومی کرکٹرز کو بہتر انداز میں سنبھال سکتا ہے اور اسکی بات سنی بھی جاتی ہے، وسیم خان سابق کپتان وسیم اکرم اور رمیز راجہ کی رائے کو بہت اہمیت دیتے ہیں اور وہ دونوں بھی غیرملکی کوچ کے ہی حق میں ہیں۔اس پیش رفت سے سابق ٹیسٹ کرکٹر محسن خان کے خواب چکنا چور ہو جائیں گے جو کوچ کا عہدہ سنبھالنا چاہتے ہیں،انھوں نے حال ہی میں کرکٹ کمیٹی کی سربراہی ’ نئی ذمہ داری‘ سنبھالنے کیلئے ہی چھوڑی تھی، انکا دوسرا آپشن انضمام الحق کی جگہ چیف سلیکٹر بننا ہے مگر وہ پلیئنگ الیون کے انتخاب کا بھی حق چاہتے ہیں، اس دوڑ میں کئی دیگر سابق کرکٹرز بھی شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں