بریکنگ نیوز: نواز شریف کی رہائی کی قیمت لگا دی گئی ۔۔۔ کتنے پیسوں میں نوازشریف کو چھوڑ دیا جائے گا ؟ حکومت نے شریف فیملی کو اب تک کی سب سے بڑی آفردے دی

لاہور(نیوز ڈیسک) نواز شریف جب سے جیل میں گئے ہیں تب سے ہی ڈیل ہوجانے کی آوازیں ا رہی ہیں ، اور اب وزیر اطلاعات فواد چودھری نے بھی متنازعہ بیان دے دیا ہے ، وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف رہائی حاصل کرنا چاہتے ہیں تو

نیب کے اندر قانون موجود ہے۔نواز شریف نیب قانون میں موجود پلی بارگین سے رہائی حاصل کر سکتے ہیں۔فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے کیس کا 300 بلین روپے بنتے ہیں اگر وہ دیں تو پھر عدالت فیصلہ ان کی رہائی کا فیصلہ کر سکتی ہے۔پاکستان تحریک انصاف کے وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے کچھ روز قبل دعویٰ کیا تھا کہ نواز شریف نے دو ارب ڈالرز پلی بارگین کی پیشکش کی ہے۔اور حسن اور حسین نواز نے اپنے والد کی مدد کرنے سے صاف انکار کر دیا ہے۔اد رہے کہ نجی ٹی وی چینل پر گفتگو کے دوران وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے بھی یہی دعویٰ کیا تھاکہ سابق وزیراعظم نواز شریف کے بیٹوں نے اپنے والد کو تنہاء چھوڑ دیا ہے، اور کوئی بھی شخص اس بات کی بآسانی تصدیق کروا سکتا ہے۔واضح رہے کہ گذشتہ برس 24 دسمبر کو احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور العزیزیہ ریفرنسز کا محفوظ کردہ فیصلہ سنایا تھا۔ سابق وزیراعظم نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید بامشقت، 5 ارب روپے جرمانہ اور دس سال کے لیے نااہلی کی سزا سنائی گئی تھی جبکہ فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کو بری کر دیا گیا تھا جس کے بعد کمرہ عدالت میں موجود نیب حکام نے انہیں تحویل میں لے لیا تھا۔سابق وزیراعظم نواز کو جیل کی قید، جرمانے، نااہلی اور جائیداد ضبطگی کے علاوہ بھی ایک اور سزا بھی دی

گئی جس کا ذکر نیب کورٹ کے تفصیلی فیصلے میں کیا گیا، احتساب عدالت کی جانب سے جاری تفصیلی فیصلے کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف 10 سال تک کسی بھی بینک سے کسی بھی قسم کاقرضہ بھی حاصل نہیں کر سکیں گے، یاد رہے کہ مبینہ بگڑتی صحت کے باوجود سابق وزیراعظم نواز شریف جیل سے ہسپتال نہ جانے پر بضد ہیں جبکہ ان کے اہلِ خانہ کی جانب سے ان کو منانے کی کوششیں جاری ہیں، گذشتہ روز سابق وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز نے سلسہ وار ٹویٹس کے ذریعے اپنے اسیر والد کی صحت کے حوالے سے سنگین خدشات کا اظہار کیا تھا، پاکستان اور انڈیا کے درمیان جاری کشیدگی کے باعث پسِ منظر میں چلے جانے کے بعد نواز شریف کی صحت کے حوالے سے خدشات ان ٹویٹس کے بعد ایک مرتبہ پھر خبروں میں ہیں، مریم نواز نے بتایا کہ وہ نواز شریف کی والدہ کے ہمراہ کوٹ لکھپت جیل جا رہی ہیں۔ ’مجھے امید ہے کہ وہ ہسپتال جانے کے لیے مان جائیں گے۔ کیا پتہ وہ (نواز شریف کی والدہ) انھیں منانے میں کامیاب ہو جائیں کیونکہ نواز شریف نے کبھی انہیں انکار نہیں کیا، اور اب یہ خبر سامنے آئی ہے کہ وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف رہائی حاصل کرنا چاہتے ہیں تو نیب کے اندر قانون موجود ہے۔نواز شریف نیب قانون میں موجود پلی بارگین سے رہائی حاصل کر سکتے ہیں۔فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے کیس کا 300 بلین روپے بنتے ہیں اگر وہ دیں تو پھر عدالت فیصلہ ان کی رہائی کا فیصلہ کر سکتی ہے۔پاکستان تحریک انصاف کے وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے کچھ روز قبل دعویٰ کیا تھا کہ نواز شریف نے دو ارب ڈالرز پلی بارگین کی پیشکش کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں