28 سالہ نوجوان نے ملازمہ کے ساتھ انتہائی غیر اخلاقی حرکت کی ویڈیو فحش فلموں کی ویب سائٹ پر ڈال دی، ایسا کیوں کیا؟ پولیس نے پکڑ کر پوچھا تو آگے سے ایسی وجہ بتادی جو کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا

حیدرآباد(نیوز ڈیسک) انسان جب ہوس کا غلام بن جائے تو گناہ اس کے لئے کار لذت بن جاتا ہے اور اس کی ہوس ایک کے بعد ایک گناہ اس سے سززد کرواتی چلی جاتی ہے۔ بھارت سے تعلق رکھنے والا ایک نوجوان آئی ٹی پروفیشنل ہوس کے ہاتھوں مجبور ہو کر خود کو ذلیل و رسوا کر لینے کی ایک ایسی ہی عبرتناک مثال بن گیا ہے۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق 28 سالہ ناجیشور راﺅ ایک بڑی آئی ٹی کمپنی میں اچھے عہدے پر فائز ہے۔ اس نے اپنے گھر میں کام کرنے والی ایک ملازمہ کے ساتھ ناجائز تعلق استوار کر رکھا تھا اور فحش فلموں کی لت میں بھی مبتلا تھا۔ بیہودہ فلموں کی ایک ویب سائٹ کو وہ اکثر وزٹ کرتا تھا لیکن ہوس پرستی کے اگلے مرحلے میں داخل ہونے کے لئے وہ اس ویب سائٹ کی پریمئیم ممبر شپ حاصل کرنا چاہتا تھا۔ اس مقصد کے لئے ضروری تھا کہ وہ ویب سائٹ پر اپنی بنائی گئی کوئی فحش فلم اپ لوڈ کرے۔ ناجیشور کے اپنی ملازمہ کے ساتھ ناجائز مراسم تو تھے ہی سو اس نے فیصلہ کیا کہ اس کے ساتھ اپنی خفیہ فلم بناکر اسے ویب سائٹ پر اپ لوڈ کر دے گا۔ اس نے اپنے شیطانی منصوبے کا عملی جامہ بھی پہنا ڈالا اور ملازمہ کے ساتھ بے حیائی کی خفیہ طریقے سے ویڈیو بنانے کے بعد اسے ویب سائٹ پر اپ لوڈ کر دیا۔

چند دن بعد ہی ویب سائٹ پر موجود برہنہ فلم کی خبر ملازمہ تک بھی پہنچ گئی اور وہ شکایت لے کر پولیس کے پاس جا پہنچی۔ مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ ملازمہ کی شکایت پر ناجیشور کو حراست میں لے لیا گیا۔ جب اس سے پوچھ گچھ کی گئی تو اس نے ساری کہانی بیان کر دی کہ کس طرح فحش ویب سائٹ کی پریمئیم ممبرشپ کے حصول کے لئے اس نے ملازمہ کے ساتھ اپنے شیطانی فعل کی خفیہ ویڈیو بنا کر اسے اپ لوڈ کیا تھا۔ ملزم پولیس کی حراست میں ہے جبکہ دریں اثناءغیر ملکی ویب سائٹ پر موجود ویڈیو کو ڈیلیٹ کروانے کی کوشش بھی کی جا رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں