لڑکی نے پٹرول پمپ اور کار کو آگ لگادی وجہ جان کر آ پ بھی حیران رہ جائیں گے

اسرائیل میں ایک لڑکی نے پٹرول پمپ کے ورکر سے سگریٹ مانگی،ورکر نے سگریٹ دینے سے انکار کردیا جس پر لڑکی نے غصے میں پٹرول پمپ اور وہاں کھڑی کار کو آگ لگا دی۔برطانوی اخبار” انڈی پنڈینٹ “ کے مطابق اسرائیلی پولیس نے ملزمہ کو گرفتار کرلیا ہے سی سی ٹی وی فوٹیج کے مناظر انتہائی حیران کن ہیں،خاتون کی عمر تقریباً تیس سال

کے قریب ہے جس نے یر وشیلم میں پٹرول پمپ کو آگ لگا د ی۔ سی سی ٹی وی سے ظاہر ہوتا ہے کہ ایک خاتون پٹرول پمپ پر ایک آدمی کے قریب آتی ہے جو کار میں پٹرول بھر رہا ہوتا ہے، خاتون اس سے مختصر بات کرکے چلی جاتی ہے پھر چند لمحوں بعد وہ کار کے فیو ل ٹینک کے کیپ پر کوئی جلتی ہوئی چیز پھینک دیتی ہے،اس کے بعد آگ بھڑک اٹھتی ہے اور وہ خاتون وہاں سے فرار ہو جاتی ہے۔ وہ آدمی خوفزدہ ہو کر گاڑی اور اور پٹرول پر لگی آگ کو دیکھتا ہے۔ کچھ ہی دیر میں کار مکمل جل جاتی ہے،رپورٹ کے مطابق جب کار کو آگ نے پکڑا اس وقت ڈرائیور کا بھائی کار میں موجود تھا جو محفوظ رہا۔پولیس ترجما ن کا کہنا ہے وہ لڑکی پٹرول بھرنے والے کے پاس آئی اور سگریٹ مانگا ، سگریٹ نہ دینے پر لڑکی نے جیب سے لائٹر نکالا اور پٹرول پمپ کوآگ لگا دی۔کار کے مالک نے یہ سمجھا کہ اس کی کار کے فیول ٹینک سےپٹرول پمپ کو آگ لگی اور وہ خوف سے بھاگ گیا۔ پٹرول اسٹیشن کے ملازمین نے آگ پر قابو پایا۔ خاتون کو کچھ دیرکے بعد گرفتار کر لیا گیا جس نے اس واقعے میں ملوث ہونے سے انکارکیا۔ یروشلم کی عدالت نے اس کی گرفتاری میں پانچ دن کی توسیع کرکے اس کے نفسیاتی معائنہ کا حکم دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں