حکومت کا8نئی یونیورسٹیاں بنانے کافیصلہ،یہ جامعات کہاں بنائی جائیں گی؟ وزیراعلیٰ پنجاب نے نوجوانوں کو اب تک کی سب سے بڑی خوشخبری دے دی

لاہور(ویب ڈیسک)وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارنے کہاہے کہ حکومت معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے پرعزم ہے او ر اسی مقصد کو پوراکرنے کیلئے آٹھ نئی یونیورسٹیاں بنارہی ہے،انہوں نے بتایا کہ یہ یونیورسٹیاں ان علاقوں میں بنائی جائیں گی جہاں اعلیٰ تعلیم کی مناسب سہولیات نہیں ہیں۔طلبہ کے حقوق کے تحفظ کے عالمی دن پر جاری کئے

گئے اپنے پیغام میں وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا طلبہ ملکی ترقی کی منزل کے حصول میں مددگار ثابت ہوتے ہیں اور کسی بھی ملک کا عظیم سرمایہ ہوتے ہیں۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کاکہنا ہے کہ معیاری اور جدید تعلیمی سہولیات کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہاحکومت نے طلبہ کو اعلیٰ تعلیم فراہم کرنے کیلئے آٹھ یونیورسٹیاں بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔یہ یونیورسٹیاں ان شہروں میں بنائی جائیں گی جہاں پہلے اعلیٰ تعلیم کی سہولت میسر نہیں تھی۔بہترین مستقبل یقینی بنانے کیلئے طلبہ کو معیاری تعلیم کی راہمی اولین ذمہ داری ہے۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق حکومت نے پلان بی کو ناکام بنانے کے لیے جے یو آئی ف کے مدرسوں کی نگرانی شروع کردی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق جمعیت علمائے اسلام(ف) کی جانب سے پلان بی کے تحت دن کے اوقات میں مختلف شہروں کی شاہراہوں پر دھرنے چوتھے روز اتوارکو بھی جاری رہے ۔کارکنان نے حب ریور روڈ بند کر دیا ہے۔ سندھ، بلوچستان کے درمیان دھرنے کے باعث ٹریفک کی آمد و رفت بند ہو گئی ہے، شہری سڑک پر پھنس گئے ہیں، کوئٹہ چمن شاہراہ اور سکھر میں بھی قومی شاہراہ بلاک کر دی گئی ہے جس سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑا۔کندھکوٹ میں بھی جے یو آئی کے کارکنان نے انڈس ہائی وے پر دھرنادیا، جس سے ٹریفک معطل ہے، گھوٹکی میں بھی جے یو آئی کا قومی شاہراہ پر دھرنا چوتھے روز میں داخل ہوگیا ہے جبکہ سکھر میں ٹھیڑی بائی پاس پر دھرنا دیا گیا ہے، قومی شاہراہ بلاک ہوگئی اور گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاریں لگ گئیں جس کے بعد اب پولیس نے پنجاب بھر کے مدرسوں میں زیر تعلیم بچوں اور عملے کی نگرانی شروع کردی، مدرسوں کے سرپرستوں کی بھی مانیٹر جاری ہے۔ذرائع کے مطابق پنجاب کے تمام پولیس افسران کو مدرسوں میں ہونے والی سرگرمیوں سے اپدیٹ رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ جمیعتِ علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے دھرنا ختم کرنے کے بعد پلان بی کا اعلان کیا تھا جس کے تحت مختلف شہروں میں احتجاج اور دھرنے دیے جارہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں